تعلیمی و ثقافتی کمیٹی/ چہلم سے متعلقہ امور کا مرکزی دفتر

banner-img banner-img-en
logo

 ادب اور تحقیق


حضرت فاطمہ کی سیرت میں ژرف نگاہی

پرنٹ
حضرت فاطمہ کی سیرت میں ژرف نگاہی

شہزادی کا اعلی کردار اجتماعی امور میں بہت فعال رہا ہے شہزادی ہر سنیچر کو شہدائے احد کی زیارت کو جاتی تھیں اور حضرت حمزہ و دیگر شہدا کی مغفرت و علوئے درجات کی دعا کرتی تھیں ۔ [1]

شہزادی نے باپ کے وصال حق کے بعد امامت کی حفاظت کے فریضے کی ادائیگی میں کسی بھی فداکاری سے دریغ نہیں کیا اور بارہا اجتماع میں تشریف لائیں اور بے مثال خطبہ ارشاد فرمایا:

فصاحت و بلاغت سے لبریز ایک خطبہ ارشاد فرمایا کہ عرب کے نامور فصیح و بلیغ افراد کو حیران و ششدر کردیا ۔ [2]

وہی شہزادی جو یہ فرماتی ہیں کہ عورت کے لئے بہتر یہ ہے کہ نہ وہ کسی نا محرم مرد کو دیکھے اور نہ ہی کوئی نامحرم مرد اس کو دیکھے لیکن اسلامی معاشرے کے مفادات کو خطرے میں دیکھا تو مسجد نبی کی جانب گئیں اور مہاجرین و انصار کے جم غفیر میں غاصبان حق خلافت کی اینٹ سے اینٹ بجادی ۔ شہزادی کا یہ کردار اس حقیقت کی تائید ہے کہ میرا گذشتہ قول عورت کے لئے بہتر اور افضل ہے کہ گھر میں رہے اگر اس کو ضرورت پیش نہیں آتی ہے تو ۔

 

[1] بحار ، ج۴۳، ص ۹۔

[2] رحلت رسول کے بعد شہزادی سے منسوب تین خطبات ذکر ہوئے ہیں ۔



حوالہ جات: بحار ، ج۴۳، ص ۹۔
بھیجنے والا: ایڈمنسٹریٹر
 چہلم کے تعلیمی اور ثقافتی چینل میں سبسکرائب کریں

پرنٹ

ٹیگز حضرت فاطمہ۔ کی ۔سیرت ۔ ژرف نگاہی

تبصرے


تبصرہ بھیجیں


Arbaeentitr

 حدیثیں

 دعا و زیارات